جمعرات, 28 اکتوبر 2021


ہوٹل مینجمنٹ کالج "کوتھم" نے اپنی چھٹی کانوکیشن منعقد

 کراچی کے نجی ہوٹل میں پاکستان کے مشہور و معروف ہوٹل مینجمنٹ کالج "کوتھم" نے اپنی چھٹی کانوکیشن منعقد کی۔

جس میں 150 سے زائد کلنری اور بیکنگ شیف اور ہوٹل مینجمنٹ گریجویٹ میں اسناد تقسیم کی گئیں۔ کانوکیشن کے مہمان خصوصی پاکستان انجینئرنگ کونسل کے نو منتخب صدر نجیب ہارون، جب کہ مہمانان خصوصی میں کوتھم پاکستان اور دوبئی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر احمد شفیق، ایگزیکٹو ڈائریکٹر کوتھم کراچی انجینئر صابراحمد، کراچی میں ملائیشیا کے قونصل جنرل خیر النظران عبد الرحمن تھے تقریب میں طلبا وطالبات کے ساتھ ان کے والدین اور کراچی کی ہوٹل اور فوڈ انڈسٹری سے بڑی تعداد میں مہمانوں نے شرکت کی

کانوکیشن تقریب کے ناظم مرزا ثوبان بیگ نے کوتھم کراچی کے چھٹی کانوکیشن کو پاکستان کے لیجنڈ محمد علی سدپارہ کے نام کرتے ہوئے کہا مشکل ترین حالات میں محمد علی سدپارہ مسلسل جدوجہد اور آگے بڑھتے رہنے کی علامت تھے اور پاکستانی قوم کبھی اپنی ہیرو کو نہیں بھولتی ہے۔

تقریب سے افتتاحی خطاب کرتے ہوئے ایگزیکٹو ڈائریکٹر کوتھم کراچی انجینئر صابر احمد نے کہا یہ دو سال پاکستان اور دنیا بھر کی ہاسپٹلٹی فوڈ اور ایجوکشن انڈسٹری کے لئے کڑی آزمائش کے سال تھے کرونا نے تعلیمی سلسلسے کو بہت نقصان پہنچا یا لیکن کو کوتھم کے پر عزم طلبا ء وطالبات نےان مشکل حالات میں تعلیم کو مکمل کیا اور آج نئے عزم کے ساتھ یہاں موجود ہیں اور پاکستا ن اور دنیا بھر کی انڈسٹری میں کام کر نےکےلئےتیار ہیں

تقریب سے خطاب کرتے انجینئر نجیب ہارون کا کہنا تھا کہ پاکستان اور دنیا بھر کی معیشت مشکل حالات سے گزر رہی ہے خطہ کے بدلتے ہوئے حالا ت جہاں مشکلات کا سبب ہیں وہیں خص طور پر ہاسپٹلٹی فوڈ اور ٹورزم انڈسٹری کے لئے نئے مواقع پیدا ہو رہے ہیں

طلبہ و طالبات سے مخاطب ہوتے ہوئے چیف ایگزیکٹو آفیسر کوتھم پاکستان و دوبئی احمد شفیق نے کہا کہ کو تھم نے گزشتہ بیس سالوں میں پاکستان اور دنیا بھر کی ہاسپٹلٹی انڈسٹری کے لئے ہزاروں نوجوان لڑکے اور لڑکیاں تیار کئے ہیں اور اپنے بہترین تعلیمی نظام کی وجہ سے کوتھم پاکستان کا نمبر ون کالج ہےانہوں نے طلباء اور طالبا ت کو کرونا کے دوران مچکل حالات میں تعلیم مکمل کر نے ہے مبارکباد دی اور کراچی میں کالج کی انتظامیہ اور اساتذہ کو پاکستان کے لئے ہنر مند افراد کار بنانے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

ملائشین کونسل جنرل خیر النظرن عبد الرحمن نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ملائیشیا طویل عرصے سے برادر اسلامی ممالک ہیں اور پاکستانی ہنر مند طلباء و طالبات کے لئے اس ٹرید میں مزید تعلیم کے لئے ملائیشیا کی یونیورسٹیوں کے دروازے کھلے ہوئے ہیں انہوں نے طلباء وطالبات کو دل کی گہرائیوں سے مبارکباد دی اور یقین دلایا

مشکلات جلد دور ہو جائیں گی اور ہم ایک دفعہ پھر ترقی کا سفر تیز تر کر نے میں کامیاب ہوجائیں گےاس کے بعد پاس ہونے والے طلباء و طالبات میں سرٹیفیکس اور ایوارڈ ز تقسیم کئے گئے اور مہمان گرامی کو تقریب کی یادگاری شیلڈز دی گئیں تقریب کا اختتام دعا پر کیا گیا، جس میں پاکستان کی سلامتی اور ترقی کے لیے خصوصی دعا مانگی گئی

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment