پیر, 17 جون 2024

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)پاناما لیکس کی سماعت کے دوران دلائل دیتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ میں اتنا اسکول و کالج نہیں گیا جتنا عدالت میں پیش ہوتا رہا ہوں ،سب سے زیادہ سوال جسٹس عظمت سعید نے کیے اس لیے ان کا دل زخمی ہو گیا ۔اس بات پر جسٹس عظمت نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ آپ تھوڑی سنجیدگی اختیار کریں تاکہ آگے بڑھیں ۔
تفصیل کے مطابق سپریم کورٹ میں پاناما لیکس کیس کی سماعت کے دوران شیخ رشید نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ اہم فیصلوں کے لیے اللہ ہی لوگوں کا انتخاب کرتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ انصاف کی اکیڈمی میں ایک دن بھی ناغہ نہیں کیا ،میں اتنا اسکول و کالج نہیں گیا جتنا عدالت میں پیش ہوتا رہا ہوں ۔
ان کا کہنا تھا کہ عدالت نے شریف خاندان سے 371سوالات کیے ،جواب نہیں دیا گیا ،سب سے زیادہ سوالات جسٹس عظمت سعید نے کیے ،اس لیے ان کا دل زخمی ہو گیا ۔اس بات پر جسٹس آصف کھوسہ نے کہا کہ کیا جسٹس عظمت سعید کا دل جواب نہ آنے سے زخمی ہوا ؟۔شیخ رشید کی بات پر جسٹس عظمت سعید نے کہا کہ آپ تھوڑی سنجیدگی اختیار کریں تاکہ آگے بڑھیں جس پر شیخ رشید نے کہا کہ میں سنجیدگی سے بات کر رہا ہوں ۔
 

 

 

یمز ٹی وی(اسلام آباد)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہاہے کہ پانامہ کیس نوازشریف جیت کربھی ہارے گا اورہم ہارکے بھی جیتیں گے ،نواز،مودی اورٹرمپ لڑائی اینگل کانام ہے ،2018ء میں نوازشریف نہیں ہوگا،جبکہ آصف زرداری کے نیچے بلاول کیاپدی کیا پدی کاشوربہ؟راناثناء اللہ اورسعدرفیق جوبھی کہیں کرپشن کاتابوت سپریم کورٹ سے ہی نکلے گا، نوازشریف کوفادارانسان چاہیں ،وفاداری پرنوازشریف نوازتاہے۔

میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ نوازشریف کوقطری شہزادوں کاخط عدالت میں پیش کرنے کاجس نے بھی مشورہ دیاہے اس نے نوازشریف کوٹھیک طرح سے پھنسایاہے ،سناہے کہ عدالت میں نوازشریف کے وکیل تیسراخط پیش کرنے والے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ن لیگ کے تینوں وکلاء نے نوازشریف کاکیس مزیدخراب کیاہے ، نوازشریف کے وزراء اور ہم منتخب لوگ ہیں لہذاہمیں عدالت نہیں نکال سکتی ،میں وزیر اعظم کو مشورہ دیتاہوں کہ وہ مستعفی ہوجائیں ۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ ججزکافرض ہے کہ وہ انصاف کریں ،ججزپرہمیں بھروسہ ہے ،اگرہمارے خلاف بھی فیصلہ آیاتوقبول کریں گے ،مگرنوازشریف یادرکھیں آپ جیت کربھی ہارجائیں اورہم ہارکربھی جیت جائیں گے ۔انہوں نے کہاکہ ٹرمپ ،مودی اورنوازشریف ٹرائی اینگل ہیں ،آئندہ الیکشن میں پنجاب میں زبردست ایکشن ہوگا، 2017ء دنیابھرسمیت پاکستانی سیاست کیلئے اہم ہے ،2018ء میں نوازشریف کونہیں دیکھتا ، بلاول بھٹوملکی سیاست میں پہلے کچھ کرتا توکرتامگراپنے والدآصف علی زرداری کی قیادت میں کیاپدی کیاپدی کاشوربہ؟۔

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ شریف فیملی بیانات بدل رہی ہے مگر جھوٹ انکے گلے پڑیگا اور پاکستان کی سپریم کورٹ تاریخی فیصلہ دے گی ۔
سپریم کورٹ کے باہر میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ شریف فیملی بیانات بلد رہی ہے اور ایک جھوٹ چھپانے کیلئے کئی جھوٹ بولے جا رہے ہیں ۔امید ہے 10پندرہ دن میں عدالت سے فیصلہ آجائے گا ۔
 
انہوں نے کہا کہ کیس میں سوالات اٹھتے ہیں تو وکلاءجواب تیار کر لیتے ہیں ۔ اخبارات سے پتہ چلا کہ کوئی نیاخط آرہا ہے۔

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے گزشتہ روز شیخ رشید کے خلاف دئیے گئے بیان پر شرمندگی ظاہر کردی ۔ان کا کہنا تھا کہ کل شیخ رشید کے خلاف بات کی بعد میں محسوس ہوا کہ یہ کیا بات کی ہے پاناما لیکس کیس کی سماعت کے بعد میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ سعدرفیق نے کہا کہ عمران خان میڈ یا پر آتے ہیں اور کہتے ہیں تلاشی سے ڈر گئے ،اس طرح کی بازاری باتوں پر ہمیں بھی جواب دینا پڑتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کل میں نے شیخ رشید کے بارے میں بات کی بعد میں احساس ہوا کہ یہ کیا بات کی ہے ۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان اور ان کے رفقاءکی باتوں کے جواب میں کچھ باتیں نکل جاتی ہیں جن پر بعد میں تکلیف بھی ہوتی ہے ۔وفاقی وزیر ریلوے نے سپریم کورٹ سے استدعا کی کہ ٹی وی پروگراموں اور سیاسی تقریروں میں پاناما لیکس کیس کے بارے میں جو جو باتیں کی جا رہی ہیں ،ان سب پر توہین عدالت لگانے کے لیے جائزہ لینا چاہیے ۔ ان کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ نادانستہ یا دانستہ طور پر اداروں پر دباﺅ ڈالنا چاہتے ہیں ۔

 

انہوں نے کہا کہ اعلیٰ عدالت کی جانب سے بعض ریمارکس پر ہمیں بھی اعتراض ہیں لیکن ہم ان پر بات نہیں کرتے کیونکہ عدلیہ کا تقدس پامال نہ ہو اور عدالت کا جو بھی فیصلہ آئے ہم سب کو قبول ہونا چاہیے ۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز خواجہ سعد رفیق نے شیخ رشید کے بارے میں کہا تھا کہ اگر مسلم لیگ ن انہیں بھی ہڈی ڈال دیتی تو آج ہمارے خلاف باتیں نہ کرتے ۔

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ سرکار نے منی ٹریل بتاد ی تو ان کے کیس میں جان ہے ورنہ بے جان ہے۔سرکار بتائے 12 ملین درہم میں کس طرح اتنی برکت پڑی۔کرپشن کا تابوت سپریم کورٹ سے نکلے گا۔

پانامہ کیس کی سماعت سے قبل میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ پانامہ میں آج سرکاری وکیل دلائل دیں گے،کل وزیراعظم نواز شریف کو بلانے کی استدعاکی تھی۔

انہوں نے کہا کہ کیس میں بڑی جان ہے امید ہے کہ انصاف ہوگا۔۔سربراہ عوامی مسلم لیگ نے کہا کہ آرٹیکل 62,63 پر 12 ارکان کو نااہل کیا گیا یا تو ان ارکان کو واپس بلایا جائے ورنہ نواز شریف کو بھی گھر بھیجا جائے۔

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد ) سپریم کورٹ میں پاناما کیس کی سماعت کا آغاز ہوگیا۔ذرائع کے مطابق جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں جسٹس عظمت سعید شیخ ، جسٹس اعجاز الاحسن ، جسٹس اعجاز افضل اور جسٹس گلزار احمد پر مشتمل 5رکنی لارجر بینچ مسلسل ساتویں ور مجموعی طور پر پاناما لیکس کیس کی 17ویں سماعت آج دوبارہ کر رہا ہے جہاں وزیر اعظم کے وکیل مخدوم علی خان اپنے دلائل دے رہے ہیں۔

کمرہ عدالت میں درخواست گزار اور چیئرمین تحریک انصاف عمران خان ، سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید احمد ، امیر جماعت اسلامی مولانا سراج الحق ، جہانگیر ترین ، شاہ محمود قریشی ، عمران خان کے وکیل نعیم بخاری ، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب ، لیگی رہنما طلال چودھری اور دیگر موجود ہیں۔

گزشتہ روز ہونے والی سماعت میں تحریک انصاف کے وکیل نعیم بخاری نے پانچ روز سے جاری اپنے دلائل مکمل کیے جس کے بعد عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد کے دلائل سنے گئے اور سماعت ملتوی ہونے سے چند منٹ قبل وزیر اعظم کے وکیل مخدوم علی خان کو دلائل کا موقع ملا جو آج بھی اپنے دلائل جاری رکھے ہوئے ہیں۔ان کے دلائل مکمل ہونے کے بعد وزیراعظم کے بچوں کے وکلاءکے دلائل سنے جائیں گے۔

یاد رہے سابق چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں 5رکنی لارجر بینچ نے کیس کا آغاز کیا مگر پھر ان کی ریٹائرمنٹ کے بعد نئے چیف جسٹس ثاقب نثار نے جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 5رکنی لارجر بینچ قائم کیا ہے جو اب اس کیس کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر کر رہا ہے ۔

 


ایمزٹی وی(اسلام آباد)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ نعیم بخاری پر تنقید نہیں کی میڈیا نے میرے نام سے بیان چلایاتھا۔ پانامہ کیس شیخ رشید،عمران خان یا سراج الحق کا نہیں 20 کروڑ عوام کا ہے۔سپریم کورٹ میں پانامہ کیس کی سماعت سے قبل شیخ رشید نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ انصاف 20 کروڑ عوام کا حق ہے۔


نعیم بخاری پی ٹی آئی کا وکیل ہے۔ نعیم بخاری سے عمران خان مطمئن ہیں تو میں بھی مطمئن ہوں۔انہوں نے کہا کہآرٹیکل 62 اور 63 تمام قوانین کی ماں ہے، 62 ایف میں کسی مزیدثبوت کی ضرورت نہیں۔ریاستی ادارے ریاست کے غلام ہوتے ہیں۔ سپریم کورٹ سے کرپشن کا ثبوت نکلے گا

نعیم بخاری کو قانون کا کچھ پتہ ہی نہیں 

شیخ رشید کا مزید کہنا تھا کہ عوامی مسلم لیگ اپنا کیس خود لڑ رہی ہے۔دھرنا دیں گے اس بار دھرنے کا فیصلہ عوام اور شیخ رشید کریں گے۔نعیم بخاری پی ٹی آئی کے وکیل ہیں نہ اس پر بات کی ہے نہ کرنے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم،انکے بچوں اور ہارون پاشا کا جواب دیکھ لیں سے کا جواب مختلف ہے۔گذشتہ روز پانامہ کیس کی سماعت کے بعد شیخ رشید نے نعیم بخاری کے بارے بیان میں کہا تھا کہ اگر پی ٹی آئی کے وکیل اسی طرح کیس لڑتے رہے تو ہم کیس ہار جائیں گے۔

 

 

ایمز ٹی وی (اسلام آباد) عوامی مسلم لیگ کے سر براہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ قطری شہزادے کو سپریم کورٹ بلا کر شہادتیں لی جائیں تاکہ کیس منطقی انجام تک پہنچے ۔

احاطہ عدالت کے باہر  انہوں نے کہا کہ قطری شہزادے کو سپریم کورٹ بلانے کی استدعا کروں گا ۔ان کا کہنا تھا کہ قطری شہزادے کی شہادتیں لی جائیں تاکہ کیس منطقی انجام کو پہنچے ۔

شیخ رشید نے مزید کہا کہ اگر عدالت نے سنا تو نواز شریف کو کورٹ میں بلانے کی استدعا بھی کروں گا کیونکہ یہ پاکستان کی تاریخ کا اہم ترین کیس ہے ۔

 

 

ایمزٹی وی (اسلام آباد)راولپنڈی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنما حنیف عباسی کا کہنا تھا کہ پاکستان کی پوری اپوزیشن جماعتیں خصوصاً عمران خان ہمیں گالیاں دیتے جائیں لیکن ہمیں کوئی پرواہ نہیں ہے، ہم پاکستان کی تعمیر و ترقی پر توجہ جاری رکھیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کو کھلا چیلنج ہے کہ وہ آئیں اور ہم سے تعمیر و ترقی کا مقابلہ کرکے دیکھ لیں۔

حنیف عباسی کا کہنا تھا کہ عمران خان کہتے ہیں کہ (ن) لیگ والے صرف سڑکیں اور پل بناتے ہیں، وہ بالکل سچ کہتے ہیں کیوں کہ سڑکیں اور پل بنائے بغیر فاصلے نہیں سمٹتے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے عمران خان کے آکسفورڈ میں پڑھنے کے دعوے پر شک ہے، الیکشن کمیشن کو چاہیئے کہ وہ چیرمین پی ٹی آئی کی ڈگری چیک کریں۔

مسلم لیگ (ن) کے رہنما نے کہا کہ عمران خان بتائیں کہ بنی گالہ کی زمین کہاں سے آئی، ہندؤں اور یہودیوں سے 34 کروڑ روپے کس نے منگوائے۔ ان کا کہنا تھا کہ عمران خان پہلے بھی متعدد کیسز میں شکست کھاچکے ہیں اور اب بھی شکست ان کا مقدر بنے گی، وہ اب نواز دشمنی میں خود کش بمبار کی شکل اختیار کرتے جارہے ہیں اور پاکستان کی ترقی میں رکاوٹیں پیدا کررہے ہیں، سی پیک کو بھی عمران خان ہی بیرونی طاقتوں کے کندھوں پر بیٹھ کر خراب کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔

شیخ رشید کے حوالے سے بات کرتے ہوئے حنیف عباسی کا کہنا تھا کہ ’کیا پدی اور کیا پدی کا شوربہ‘، ایک سازش کے تحت الیکشن جیتنے والے شیخ رشید اور پنڈی کے ٹھگ سے کہوں گا کہ تم صرف عوام کوہی بے وقوف بنا سکتے ہو۔

 

 


ایمزٹی وی(اسلام آباد) سپریم کورٹ نے پانامالیکس کی سماعت خود ہی جاری رکھنے کافیصلہ سناتے ہوئے جنوری2017ء کے پہلے ہفتے تک ملتوی کردی ، چیف جسٹس کی ریٹائرمنٹ کی وجہ سے آئندہ سماعت کیلئے نیا بینچ تشکیل دیاجائے گاجومقدمے کی ازسرنوسماعت کرے گا۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے پانچ رکنی بینچ نے پانامالیکس کیس کی سماعت کی ۔دوران سماعت فریقین نے کمیشن کی تشکیل اپنا اپنا موقف پیش کیا، وزیراعظم اور ان کے بچوں نے کمیشن کی تشکیل کامعاملہ عدالت پر چھوڑ دیا جبکہ پی ٹی آئی اور شیخ رشید نے کمیشن کی تشکیل کی مخالفت کی ۔ فریقین کے دلائل سننے کے بعد چیف جسٹس نے فی الحال خود یعنی سپریم کورٹ میں ہی سماعت جاری رکھنے کافیصلہ کیا اور ریمارکس دیئے کہ ہمیں فیصلہ سنانے میں کوئی رکاوٹ نہیں ۔

عدالت نے اپنے ریمارکس میں واضح کیاکہ چیف جسٹس ریٹائرڈ ہورہے ہیں اور چھٹیاں آرہی ہیں لہٰذا کیس کی سماعت جنوری کے پہلے ہفتے تک ملتوی کی جاتی ہے ۔ چیف جسٹس نے کہاکہ وہ ریٹائرہورہے ہیں ، فل کورٹ ریفرنس کے بعد بینچ کا حصہ نہیں بن سکتے لہٰذا نئے چیف جسٹس نیا بینچ تشکیل دیں گے جس کے روبروکیس کی ازسرنوسماعت کی جائے گی ۔

 

Page 3 of 5