اتوار, 16 مئی 2021


ایک اورپاکستانی کم عمر ترین مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل نے ارفع کریم، عزیز اعوان اور مہروز یاور کا ریکارڈ توڑا دیا

ایمز ٹی وی (ایجوکیشن) ٹیکنالوجی کی دنیا میں حیرت انگیز ایجادات کا ہونا کوئی نئی بات نہیں رہی ہے۔ اور ایسا معلوم ہوتا ہے کہ آئی ٹی کی پیشہ ورانہ مہارتوں کے ساتھ کھیلنا بھی شاید پاکستانی بچوں نے اپنا شوق بنا لیا ہے۔ پانچ سالہ اعیان قریشی نے کھلونوں سے کھیلنے کی عمر میں دنیا کے کم عمرترین 'مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ' کا ریکارڈ قائم کر کے دنیا کو حیران کر دیا ہے۔

پاکستانی نژاد برطانوی اعیان قریشی نے دنیا کے کم عمر ترین مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ارفع کریم، عزیز اعوان اور مہروز یاور کا ریکارڈ توڑا ہے جس کے بعد وہ مائیکرو سافٹ آپریٹنگ سسٹم میں پیشہ ورانہ مہارت رکھنے والے دنیا کے سب سے کم عمرترین 'ایم سی پی' بن گئے ہیں۔ پانچ سالہ اعیان قریشی نے برمنگھم سٹی یونیورسٹی سے مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل کےسرٹیفیکٹ کے لیے اسٹینڈرڈ امتحان پاس کرکے دنیا کے کم عمرترین ایم سی پی مہروز یاور کا ریکارڈ بریک کیا ہے جنھوں نے ساڑھے چھ سال کی عمر میں یہ ریکارڈ قائم کیا تھا۔

اعیان قریشی کے والد عاصم قریشی اور والدہ میمونہ قریشی کا تعلق لاہور سے ہے۔ عاصم  ایک آئی ٹی کنسلٹنٹ ہیں جبکہ والدہ میمونہ ڈاکٹر ہیں۔ اعیان کی پیدائش لاہور کی ہے۔ ان کا خاندان سال 2009  میں پاکستان سے برطانیہ منتقل ہوا اور کووینٹری میں رہائش اختیار کی جہاں اعیان کلفرڈ برج اسکول میں پہلی جماعت کا طالب علم ہے۔

ٹیکنالوجی کے افق پر جگمگانے والے اس ننھے ستارے کے والدین بھی اتنے ہی قابل ستائش ہیں جنھوں نے اعیان کی غیر معمولی صلاحیتوں کو اتنی کم عمری میں پہچانا اور اپنی بے پناہ مصروفیات میں سے اعیان کے لیے وقت نکالا اور اسے  اسے ایک ایسا موقع فراہم کیا جس پر آج سارے پاکستان کو فخر ہے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment