ھفتہ, 25 ستمبر 2021


سندھ بھرکی جامعات میں تدریسی سرگرمیاں معطل

کراچی: سندھ کی تمام نجی اور پبلک سیکٹرجامعات31جولائی تک بندرکھنےکافیصلہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کورونا ٹاسک فورس نے صوبے میں کورونا کیسز کی شرح 10 فیصد اور کراچی میں کیسز کی شرح 25 فیصد سے تجاوز کرنے پر ایک بار پھر پابندیاں لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ تعلیمی اداروں میں امتحانات اپنے شیڈول کے مطابق ہوںگے جبکہ سرکاری اور نجی سیکٹرز میں 50 فیصد اسٹاف حاضر ہو گا۔

دوسری طرف ایڈیشنل چیف سکریٹری داخلہ قاضی شاہد پرویز نے کہا ہے کہ سندھ کی تمام نجی و سرکاری جامعات بند ہونے کے باوجود اپنے امتحانات جاری رکھ سکیں گی۔

انہوں نے کہا کہ اسی طرح انٹر کے امتحانات بھی معمول کے مطابق ہوں گے تاہم تدریسی اور غیر تدریسی امور مکمل بند رہیں گے۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment