ھفتہ, 20 اپریل 2024


چیمپئنز ٹرافی میں بھارتی ناانصافیوں کی رپورٹ تیار،چیف کوچ شہناز شیخ 

ایمزٹی وی (کھیل)  قومی ہاکی ٹیم کے کوچ شہنازکا کہنا ہے کہ ہمارے خلاف استعمال کئے جانے والے منفی ہتھکنڈوں سے نہ صرف کھلاڑیوں کو ذہنی اذیت میں مبتلا کیا بلکہ ایسے اقدامات سے انٹرنیشنل ہاکی پر بھی منفی اثرات مرتب ہوسکتے ہیں۔ قومی ہاکی ٹیم کے کوچ کی جانب سے تیار کردہ رپورٹ کا پہلے پاکستان ہاکی فیڈریشن جائزہ لے گی بعد ازاں اسے ایف آئی ایچ کے حوالے کردیا جائے گا۔

شہناز شیخ نے بتایا کہ میں نے رپورٹ میں ان تمام واقعات کا ذکر کیا جو ہمارے کیخلاف گئے۔ انھوں نے کہا کہ چیمپئنز ٹرافی میں پاکستانی کھلاڑیوں کے ساتھ ہونے والی ناانصافی سے نہ صرف ٹیم کے حوصلے پست ہوئے بلکہ ایسے منفی اقدامات مستقبل میں انٹرنیشنل ہاکی کو بھی متاثر کرسکتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ 2 پاکستانی پلیئرز پر پابندی، رات کو انتہا پسندوں کی جانب سے دھمکیوں کی اطلاعات اور پھر فائنل والے دن ٹورنامنٹ آرگنائزرز اور ایف آئی ایچ حکام کی جانب سے بار بار بلانے کے عمل سے ہم ذہنی طور پر مفلوج ہو کر رہ گئے تھے۔

انھوں نے کہا کہ سیمی فائنل میں فتح کے بعد ہمارے کھلاڑیوں نے شرٹس اتار کر کچھ زیادہ خوشی منائی لیکن بڑے اور سنسنی خیز مقابلوں کے بعد ایسا ہوتا رہتا ہے، کھلاڑیوں کے اس عمل میں گرائونڈ میں موجود شائقین کے منفی رویے کا بھی ہاتھ تھا جنھوں نے پاکستانی کھلاڑیوں کے خلاف انتہائی نامناسب زبان کا استعمال کیا۔ انھوں نے مزید کہا کہ فائنل میں پاکستان کیخلاف گول کرنے کے بعد بعض جرمن پلیئرز نے بھی ایسے ہی خوشی منائی لیکن اس کو نظر انداز کردیا گیا۔ شہناز شیخ نے کہاکہ میں نے رپورٹ میں انٹرنیشنل ہاکی فیڈریشن سے درخواست کی کہ بھارت کے نامناسب رویے پر سخت ایکشن لیا جائے، اگر ایسا کیا گیا تو یہ انٹرنیشنل ہاکی کیلیے مثبت اقدام ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ اگر بھارت ہار تسلیم نہیں کرسکتا تو اسے انٹرنیشنل ایونٹس کی میزبانی بھی نہیں کرنی چاہیے۔

واضح رہے کہ ایونٹ کے سیمی فائنل میں میزبان ملک سے فتح کے بعد پاکستانی کھلاڑیوں کا جشن میزبان میڈیا اور فیڈریشن کو سخت ناگوار گزرا تھا۔ انھوں نے انتہائی نامناسب رویہ اختیار کرتے ہوئے فائنل سے قبل قومی کھلاڑیوں کو شدید ذہنی اذیت میں مبتلا کئے رکھا۔ انڈین فیڈریشن نے ایف آئی ایچ کو یہاں تک دھمکی دی کہ اگر گرین شرٹس پلیئرز کے خلاف ایکشن نہ لیا گیا تو وہ آئندہ کسی بھی بین الاقوامی ایونٹ کی میزبانی نہیں کریں گے، عالمی تنظیم نے صبح پلیئرز کے جشن کو قوانین کے مطابق قرار دیا لیکن دھمکی ملتے ہی پاکستانی کھلاڑیوں محمد توثیق اور امجد پر ایک میچ کی پابندی لگا دی، نائب کپتان شفقت رسول کو وارننگ جاری کر دی گئی۔ پاکستان ہاکی ٹیم کے چیف کوچ شہناز شیخ نے ٹورنامنٹ کے دوران پیش آنے والے تمام واقعات کو قلم بند کرتے ہوئے اسے پی ایچ ایف کو بھیج دیا جو جائزہ لینے کے بعد انٹرنیشنل باڈی کو ارسال کریگی۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment