اتوار, 04 دسمبر 2022


سرسیدیونیورسٹی کےزیرِاہتمام صنفِ نازک کےخوبصورت روپ‘ کےعنوان سےخواتین محفلِ مشاعرہ کانعقاد

کراچی: سرسید یونیورسٹی کے زیرِ اہتمام صنفِ نازک کےخوبصورت روپ‘ کےعنوان سے خواتین محفلِ مشاعرہ کا نعقاد کیا گیا ۔

محفل مشاعرہ میںملک کی ممتاز و نامور شاعرات نے اپنا کلام پیش کیئے۔ مشاعرے میں شاعرات اور ادبی حلقوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات کے علاوہ خواتین کی ایک کثیر تعداد نے شرکت کی ۔

خواتین کے عالمی دن کے حوالے سے منعقدہ خواتین محفلِ مشاعرہ کے موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے سرسیدیونیورسٹی کے چانسلر جاوید انوار نے کہا کہ عورت جس روپ میں بھی ہو قدرت کا حسین تحفہ ہے جس کے بغیر کائنات کی ہر چیز ، بے رنگ، بے رونق و بے کیف ہے ۔ ادب کی ترقی و ترویج میں بھی خواتین قلمکاروں نے ایک اہم و موثر کردار ادا کیا ہے ۔ خواتین نے جو ادب تخلیق کیا ہے اس سے صرفِ نظر ممکن نہیں ۔ ان کا تخلیقی اظہار، ان کے فکر و شعور کا عکاس ہے ۔

مشاعرے میں شریک شاعرات میں حجاب عباسی، فرزانہ صحاب مرزا، انجم عثمان، یاسمین یاس، پروین حیدر، مہر جمالی اورآئرن حیدر شامل تھیں جنھوں نے اپنے عمدہ کلام سے حاضرین کے دل جیت لیے ۔ شاعرات کے کلام میں عہد حاضر کی جھلک، کیفیات کی لہر اور لہجے کی تازگی نمایاں تھی جو ان کے گہر ے سماجی شعور کا آئینہ دارتھا ۔

اختتامِ تقریب پر لائبریرین شاہین عتیق اور ثروت ذولفقار نے مہمان خواتین شعراء کو شیلڈز پیش کیں ۔ اس موقع پر شعبہ لٹریری آرٹ فورم کی کنوینئر پروفیسر نوشابہ صدیقی نے بھی خواتین کے عالمی دن کی مناسبت سے اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment