اتوار, 16 مئی 2021


سرسید یونیورسٹی کےنئےکیمپس پرموسمِ بہارکی شجرکاری مہم کا افتتاح

کراچی:سر سید یونیورسٹی آف انجینئر نگ اینڈ ٹیکنالوجی کےنئےکیمپس میں شجرکاری مہم کاافتتاح کیاگیا۔

سر سید یونیورسٹی آف انجینئر نگ اینڈ ٹیکنالوجی کے چانسلر نے ایجوکیشن سٹی میں دوسوایکڑ پرواقع سرسید یونیورسٹی کے نئے کیمپس پر پودا لگا کرموسمِ بہار کی شجرکاری مہم کا افتتاح کیا ۔مہم کے دوران 100 سےزائد پودے لگائے گئے۔

تقریب کے شرکاء میں علیگڑھ مسلم یونیورسٹی اولڈ بوائز ایسوسی ایشن کے اعزازی سیکریٹری جنرل محمد ارشد خان، سابق وائس چانسلر کموڈور (ر) سلیم صدیقی، رجسٹرار سید سرفراز علی، فنانس ڈائریکٹر مناف ایڈوانی، اسٹریٹیجک پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ کے ڈائریکٹر شاہدعزیز، افشاں جمشید، ممتاز کاظمی ودیگر شامل تھے ۔

شجرکاری کے فوائد کو اجاگرکرتے ہوئے سرسید یونیورسٹی کے چانسلر جاوید انوار نے کہا کہ درخت ہر کمیونٹی کا ایک اہم جز ہیں کیونکہ درخت نہ صرف ہماری زندگی کے معیار میں اضافہ کرتے ہیں بلکہ فطرت کے حسین عناصر اور جنگل کی کشش کو شہری زندگی میں منتقل کردیتے ہیں ۔ کئی قدیم درخت تاریخی حیثیت رکھتے ہیں اور شہرکے لیے افتخار کا باعث ہوتے ہیں ۔ درخت غذا اور آکسیجن جیسی زندگی کی لازمی ضروریات کے علاوہ ادویات، پناہ گاہ اور اوزار جیسی اضافی سہولیات بھی فراہم کرتے ہیں ۔

چانسلرجاوید انوار نے سرسید یونیورسٹی کے ملازمین اور علیگ حضرات کو اپنا کردار ادا کرنے کی تلقین کے ساتھ شجرکاری کی اس مہم کو کامیاب بنانے اور ہرے بھرے پاکستان کی تعمیرکے لیے اس مہم میں سنجیدگی سے حصہ لینے پر زور دیا ۔

اس موقع پر وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر ولی الدین نے کہا کہ درخت سورج ، بارش اور ہواءوں کے اثرات کو معتدل کرکے آب و ہوا کوکنٹرول کرتے ہیں اور موسمِ سرما میں سورج کی تپتی شعاءوں کی شدت کو کم کرکے ماحول کو ٹھنڈا رکھتے ہیں ۔ ہمیں درختوں کو بچانے کی کوشش کرنی چاہئے کیونکہ درختوں کی کٹائی کی وجہ سے فضاء کی آلودگی میں اضافہ ہوتا ہے ۔ اس ضمن میں ہر ایک کو اپنا کردار ادا کرنا ہے اور نہ صرف درخت اگانے پر توجہ دینی ہے بلکہ درختوں کو بچانا بھی ہے ۔

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment