اتوار, 03 دسمبر 2023


آئینی اصلاحات کیلئے اعلیٰ سطحی کمیٹی کی تشکیل

 


ایمزٹی وی(آزاد کشمیر)وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر خان نے کہا ہے کہ وزیر اعظم پاکستان نے آزاد کشمیرمیں آئینی اصلاحات کیلئے اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دے دی ہے ،یہ کمیٹی تجاویز کا جائزہ لے کر آئینی ترامیم کی منظوری دیگی ۔

وزیر اعظم پاکستان نے دورہ مظفرآباد کے دوران آزاد کشمیر کی تعمیر وترقی و ترقیاتی میزانیہ میں اضافے ، مالیاتی بحران کے خاتمے ، آزاد کشمیر کو سی پیک کا حصہ بنانے ،ایکٹ 1974میں ترامیم ،کشمیر کونسل سے واجبات کی ادائیگی ، ٹیکس وصولی کا اختیار آزاد حکومت کو دینے ، 1450کلو میٹر شاہرات ، لوہر ٹوپہ تا کوہالہ ایکسپریس وے ، مظفرآباد تا مانسہرہ روڈ کی اپ گریڈیشن ،سی پیک کے تحت شونٹر ٹنل ،سراں تا تولی پیر سیاحتی روٹ کی تعمیر اور این ایف سی میں آزاد کشمیر کا حصہ بڑھانے کی اصولی منظوری دیدی ہے ۔

گزشتہ روزمظفرآباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ان تمام ایشوز پر جلد عملد رآمد شروع ہوگا۔ پیپلز پارٹی کشمیریوں کے خلاف قومی جرائم کی مرتکب رہی ہے ۔شملہ معاہدہ ،ایکٹ1974میں ترامیم ، این ایف سی میں آزاد کشمیر کو باہر کر کے پیپلز پارٹی نے تین جرائم کئے جس کی سزا کشمیری عوام بھگت رہے ہیں ۔وزیراعظم نے کہا کہ چھ رکنی آئینی اصلاحات کمیٹی میں وفاقی وزیر امور کشمیر ، مشیر خارجہ ، وفاقی وزیر قانون ، صدر آزاد کشمیر، وزیر اعظم آزاد کشمیر اور وزیر قانون آزادکشمیر شامل ہیں۔

 

پرنٹ یا ایمیل کریں

Leave a comment