پیر, 24 جون 2024

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ تنقید سے مسائل حل نہیں ہوتے تاہم گالی گلوچ نہیں سیدھی بات کریں ہم جواب دینے کو تیار ہیں۔

اسلام آباد میں انجینیرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ خدمات انجام دینے کے لیے ملک میں انجینیرز پر بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے، مسائل حل کرنے کے لیے انجینیرز کے پاس صلاحتیں اور سوچ ہے اور گزرتے وقت کے ساتھ یہ شعبہ بھی تیزی سے تبدیل ہورہا ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ جب (ن) لیگ کو حکومت ملی پاور پلانٹس بند تھے اور ملک کو اضافی گیس کی ضرورت تھی، آج ملک کے توانائی کے مسائل حل ہو چکے ہیں، آج ملک میں اضافی گیس موجود ہے جب کہ (ن) لیگ کی حکومت نے 10 ہزار 400 میگا واٹ بجلی سسٹم میں شامل کی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی تاریخ میں اتنا کسی نے ڈلیور نہیں کیا، تنقید ہر آدمی کرتا لیکن تنقید سے مسائل حل نہیں ہوتے، گالی گلوچ نہیں سیدھی بات کریں ہم جواب دینے کو تیار ہیں

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی جانب سے وفاقی کابینہ کا اجلاس آج شام 5 بجے طلب کرلیا گیا ہے۔وفاقی کابینہ کے اجلاس میں 15 نکاتی ایجنڈے پر غورکیا جائے گا۔
زرائع کے مطابق اجلاس میں ملک کی سیاسی اور امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا اورکابینہ زرعی ترقیاتی بینک اورہاؤس بلڈنگ فنانس کارپوریشن کے بقایا جات کی منظوری دے گی۔
اجلاس میں پی آئی اے کارپوریشن کے بورڈ آف ڈائریکٹر کی منظوری سمیت مختلف ممالک سے معاہدوں کی منظوری بھی دی جائے گی، وزارت داخلہ غیر ممنوعہ اسلحہ سے متعلق کابینہ کو بریفنگ دے گی۔
 
اجلاس میں ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری سمیت قومی اداروں میں سربراہوں کی تقرری بھی کابینہ ایجنڈے میں شامل ہیں۔

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ نوازشریف کے بہت نزدیک کے لوگ ان کے خلاف سازش کررہے ہیں۔
اسلام آباد میں میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ نوازشریف کے بہت ہی قریبی ساتھی ان کے خلاف سازش کررہے ہیں اور یہ بات سابق وزیراعظم بخوبی جانتے ہیں کہ ان کا دشمن کون ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ شاہد خاقان عباسی قائم مقام وزیراعظم ہیں اور اس سال کا لطیفہ یہ ہے کہ شاہد خاقان عباسی ہی نااہل شخص کو وزیراعظم کہتے ہیں۔
خورشید شاہ نے کہا کہ ہم نے یوٹرن نہیں لیا بلکہ حقیقت یہ ہے کہ نئی مردم شماری میں سندھ کی آبادی کم دکھائی گئی، آبادی کے لحاظ سے ہماری 10 سے 12 سیٹیں بڑھنی چاہئے تھیں،ہم قبل از وقت انتخابات کے حامی نہیں الیکشن 2018 جولائی یا اگست میں ہونے چاہئیں۔ ان کا کہنا تھا کہ انتخابات پرانی مردم شماری پر ہونے چاہئیں کیوں کہ اب نئی مردم شماری پر سوالیہ نشان ہے اور ویسے بھی مسلم لیگ (ن) کو اس پر کوئی تحفظات نہیں ہونے چاہئیں کیوں کہ 2013 کی مردم شماری پر ہی انہوں نے کامیابی حاصل کی تھی۔
 

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ فاروق ستار کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی جس میں کراچی اور حیدرآباد کے ترقیاتی پیکج کا جائزہ لیا گیا اور فنڈز کا اجراء ماہ رواں میں یقینی بنانے کا فیصلہ کیا گیا جب کہ وزیر اعظم نومبر میں حیدر آباد یونیورسٹی کا سنگِ بنیاد بھی رکھیں گے، ملاقات میں ایم کیو ایم پاکستان کے وفد نے کے ایم سی کے حوالے سے حکومت سندھ کے عدم تعاون کی شکایت بھی کی۔
اس موقع پر وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کا اقتصادی دارالخلافہ ہے جس کوامن اور خوشحالی کا گہوارہ بنانا ہمارا مشترکہ ہدف ہے۔ حکومت ملک میں ہر سطح کے منتخب جمہوری اداروں کا احترام کرتی ہے، بلدیاتی اداروں کا ملک کی ترقی میں اہم کردار ہے جس کے لئے صوبائی حکومت کی توجہ مبذول کرائی جائے گی کیونکہ شراکتی جمہوریت ہی جمہوری استحکام کی ضمانت ہے۔ حکومت نے کراچی کی ترقی کے لئے ریکارڈ پیکج منظور کیا ہے اور سابق وزیراعظم نواز شریف کے تمام وعدے پورے کیے جائیں گے۔
ایم کیو ایم پاکستان کے وفد سے ملاقات میں پاکستان میں جمہوریت کی مضبوطی کے لئے تمام جمہوری قوتوں کو اپنے اختلافات بالائے طاق رکھتے ہوئے اپنا اپنا کردار ادا کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا، اجلاس میں اس بات پر بھی اتفاق کیا گیا کہ پاکستان کی ترقی، خوشحالی اور استحکام کے لئے آئین کی بالا دستی اور جمہوری عمل کا تسلسل لازمی ہے، ملک کے تمام مسائل کا حل آئین، قانون اور پارلیمنٹ کی بالادستی میں مضمر ہے اور اس ضمن میں پارلیمان کی آئینی معیاد کا احترام ضروری ہے۔
اجلاس میں کراچی کے امن کو ہر قیمت پر یقینی بنائے رکھنے پر بھی اتفاق کیا گیا جب کہ وزیراعظم نے وزیرِ داخلہ کو ہدایت کی کہ مقدمات کے حوالے سے ایم کیو ایم پاکستان کی شکایات کا جائزہ لیا جائے اور انصاف کے تقاضے یقینی بنائے جائیں۔

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)وزیر اعظم سمیت اعلیٰ حکومتی ارکان نے گزشتہ روز آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کوقومی معیشت پر بریفنگ دی، اس موقع پر وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کے ساتھ وزیر خزانہ اسحاق ڈار، وزیر دفاع خواجہ آصف، وزیر داخلہ و پلاننگ احسن اقبال بھی موجود تھے۔ اس موقع پر غلط فہمیاں دور کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا۔
میڈیاذرائع کے مطابق آرمی چیف کو پاک چین اقتصادی راہداری کے حوالے سے بھی حقائق سے آگاہ کیا گیا۔ اجلاس کی صدارت وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کی جس میں بیرونی مسائل و خطرات اور قومی سیکیورٹی کی صورتحال پر بھی بریفنگ ہوئی۔ یہ اجلاس آرمی چیف کی جانب سے قومی معیشت کی صورتحال پر اظہار تشویش کے تقریباً ایک ہفتے بعد ہوا ہے۔
کراچی میں آرمی چیف کے ایک سیمینار سے خطاب کے بعد ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھی اپنی نیوز کانفرنس میں کہا تھا کہ قومی معیشت بہت بری نہیں تو بہت اچھی بھی نہیں ہے۔ اس بیان پر وزیر داخلہ احسن اقبال نے سخت ردعمل کا اظہار کیا تھا۔ذرائع کے مطابق حکومت کی جانب سے آرمی چیف کے ساتھ اجلاس اور بریفنگ کا مقصد وزیر داخلہ کے بیان کے پاک سول و عسکری حکام میں پیدا ہونے والی رنجش کو دور کرنا تھا۔
گزشتہ پیر کو ایک پریس کانفرنس میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے بھی قومی معیشت کے حوالے سے خدشات کو دور کرنے کی کوشش کی تھی۔اس سوال پر کہ ”کیا بریفنگ کے بعد سول اور ملٹری قیادت اب ایک پیج پر ہیں ؟“وزیر اعظم کے ترجمان ڈاکٹر مصدق ملک سے رابطہ کرنے کی کوشش کی گئی تاہم جواب نہیں ملا۔

 

 

ایمزٹی وی(کراچی)کراچی میں پورٹ قاسم پر پاکستان انٹرنیشنل بلک ٹرمینل کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت عوام کی جیب میں پیسے ڈالتی ہے نکالتی نہیں ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ جمہوریت کے بغیر ملک ترقی نہیں کرسکتا، جب بھی آمریت آئی ملک نے ترقی نہیں کی، جمہوریت میں خرابیاں ضرور ہوں گی لیکن یہ ایک عمل کا نام ہے جو چلے گا تو اس میں بہتری آئے گی۔
شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ فیصلے کا اختیار عوام کے پاس ہونا چاہئیے، عوام فیصلہ کریں گے کہ کون حکومت میں آئے گا اور کون کارکردگی نہیں دکھائے گا تو گھر چلا جائے گا، پہلے بھی جس حکومت نے عوامی مسائل حل نہ کیے اسے گھر بھیج دیا گیا, تمام مسائل جمہوریت سے ہی حل ہوں گے۔
امید ہے چیلنجز کے باوجود ملک میں جمہوریت بڑھے گی، ہمیں مل جل کر ان چیلنجز کا مقابلہ کرنا ہوگا۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ (ن) لیگ تاریخ کی وہ واحد حکومت ہے جس نے کام شروع کرکے اپنے ہی دور میں مکمل بھی کیے، اس حکومت نے تعطل کا شکار پرانے منصوبے بھی مکمل کیے، باتیں کرنے والی اور کام کرنے والی حکومتوں میں یہی فرق ہوتا ہے۔

 

 

ایمزٹی وی(خیبرپختونخواہ)وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے گورنر خیبرپختونخوا اقبال ظفر جھگڑانے ملاقات کی۔ ملاقات میں صوبے کی مجموعی صورتحال اور فاٹا کی قومی دھارے میں شمولیت کے امور پر تفصیلی بات چیت ہوئی۔
 
اس موقع پر خیبرپختونخوا کی مجموعی صورتحال سمیت فاٹا کی قومی دھارے میں شمولیت پر تفصیلی بات چیت کی گئی جبکہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ فاٹا کے خیبرپختونخوا سے انضمام کی کمٹمنٹ پر قائم اور پرعزم ہیں۔
 

 

 

ایمزٹی وی(تجارت) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی پی آئی اے کے لیے عنقریب بیل آئوٹ پیکج کا اعلان کریں گے اس کے لیے وہ وفاقی کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی کے اجلاس سے منظوری لیں گے۔ پی آئی اے کا بیل آئوٹ پیکج کم وبیش 20 ارب روپے کا ہوگا اور یہ خطیر رقم پی آئی اے کو متعدد مراحل میں ملے گی۔ اس بیل آئوٹ پیکج کی رقم سے پی آئی اے نصف درجن کے لگ بھگ جدید مسافر بردار طیارے 6سے 8سال کی ڈرائی لیزپر حاصل کرے گی۔ اسی پیکج سے پی آئی اے کے زیراستعمال طیاروں کے لیے ضروری اوریجنل سپیئر پارٹس اور ایکوئپمنٹ خریدے گی جبکہ قومی ایئر لائن میں سٹیٹ آف دی آرٹ آئی ٹی انفراسٹرکچر بھی ڈویلپ کیا جائے گا۔ پی آئی اے کے پاس اس وقت 37 طیارے ہیں جن میں سے ویت نام ایئر لائن سے مختصر ویٹ لیز پر حاصل کئے گئے 4 طیارے 31 اکتوبر تک واپس کر دیئے جائیں گے۔ اس کے نتیجے میں پی آئی اے کے زیراستعمال طیاروں کی تعداد 33 رہ جائے گی ان میں سے ایک بوئنگ777 طیارہ ،ایک ایئر بس اے320 طیارہ، ایک اے ٹی آر طیارہ نارمل اوورہالنگ اور ٹیسٹ کے لیے فی الحال گرائونڈ ہیں۔ یہ تینوں طیارے اے کیٹگری کے ٹیسٹوں کے لیے ایک ہفتے تک گرائونڈ ہیں جو آئندہ ہفتے پی آئی اے کے زیراستعمال میں آجائیں گے۔

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد)یوم دفاع پاکستان کے موقع پر قوم کے نام پیغام میں صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ دفاع وطن کے لیے جانوں کا نذرانہ پیش کرنے والوں کو خراج تحسین پیش کرتےہیں۔ دہشت گردی کا مقابلہ کرنے کے لیے 6ستمبر کی اصل روح برقرار رکھنے کی ضرورت ہے۔ صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ 6ستمبر کو اہل پاکستان نے بےمثال قومی اتحاد کا مظاہرہ کیا جو دشمن کی جارحیت کے خلاف مسلح افواج کے شانہ بشانہ کھڑے ہوئے۔ یہ دن دفاع وطن کے لیے ہر قسم کے خطرات کے خلاف ہمارا عزم مضبوط کرتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ آپریشن ردالفساد ملک کےمختلف حصوں میں کامیابی سےجاری ہے اور یہ آپریشن آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جاری رہے گا۔ دنیا کی کسی قوم نےدہشت گردی کےخلاف جنگ میں پاکستان جتنی قیمت ادانہیں کی ہے۔ دوسری جانب وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ پاکستانی افواج نے دہشت گردی کے خلاف دُنیا کا سب سے بڑا اور مشکل معرکہ لڑ کر اپنی پیشہ وارانہ مہارت کا ثبوت دیا ہے جبکہ آپریشن ضربِ عضب، ردالفساد اور خیبر 4نے دشمن کی کمر توڑ دی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس دن دنیا کو پیغام دیا پاکستانی قوم کسی بھی جارحیت سےنمٹنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ اس روز پاک فوج نے بےمثال جرأت و بہادری سے دشمن کی آرزوؤں پر پانی پھیر دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ آج ہم ایک ایٹمی قوت ہیں، ہماری افواج پہلے سے زیادہ تربیت یافتہ اور چوکس ہیں جبکہ ہماری معیشت کا شمار دنیا کی اُبھرتی ہوئی معیشتوں میں ہورہا ہے

 

 

ایمزٹی وی(اسلام آباد) پاکستانی سفیروں کی تین روزہ کانفرنس اسلام آباد میں جاری ہے جس میں خطے کی صورتحال پرغور کیا جارہا ہے۔ میڈیا ذرائع کے مطابق اسلام آباد میں پاکستانی سفیروں کی 3 روزہ کانفرنس شروع ہوگئی جس کا افتتاح وزیرخارجہ خواجہ آصف نے کیا۔ کانفرنس میں امریکا، بھارت، چین، سعودی عرب،ایران، قطر، روس، متحدہ عرب امارات، برسلزودیگرممالک میں تعینات سفراشریک ہیں۔ کانفرنس میں خطے کی صورتحال، رونما ہونے والی تبدیلیوں پرغور، افغانستان کی صورتحال اورامریکا کی خطے سے متعلق پالیسی بھی زیرغورآئے گی جب کہ کانفرنس میں خلیج کی صورتحال، سعودی عرب اور قطرسے تعلقات کا جائزہ لیا جائے گا۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کانفرنس کے اختتامی سیشن میں شریک ہوں گے اور پاکستانی سفیروں کی کانفرنس سے خطاب بھی کریں گے۔

 

Page 8 of 10